Breaking News

پاکستان سے بھارت جانیوالی سیما حیدر کے پاکستانی شوہر نے وہ کام کردیا جس کی شاید کسی کوتوقع نہ تھی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) آن لائن  دوستی اور محبت کے بعد 4 بچوں کے ہمراہ پاکستان سے بھارت جانے والی پاکستانی خاتون سیما حیدر کے پہلے شوہر نے اپنے بچوں کی حوالگی کے لیے انسانی حقوق کی تنظیم سے رابطہ کرلیا،  تنظیم کی مدد سے بچوں کے حصول کے لیے بھارت میں وکیل کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ برس مئی میں 3 بیٹیوں اور ایک بیٹے کے ساتھ پاکستان سے بھارت جانے والی سیما حیدر کے شوہر نے بچوں کی واپسی کے لیے انسانی حقوق کی تنطیم انصار برنی ٹرسٹ سے رابطہ کیا ہے۔انصار برنی کا کہنا ہے کہ یہ صرف ایک خاتون کا بچوں کے ساتھ بھارت منتقلی کا معاملہ نہیں بلکہ اس کے پیچھے ایک مکمل سوچی سمجھی پلاننگ ہے جس میں دہشت گردی کا عنصر بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ آج نیوز کےمطابق انصار برنی نے  بتایا کہ بین الاقوامی قوانیں کے تحت بچوں کو ان کا مذہب تبدیل نہیں کرایا جاسکتا، اس کے خلاف بھارتی عدالت سے بھی رجوع کریں گے۔سیما کے پہلے شوہرغلام حیدرکا کہنا ہے کہ، ’مجھے اس بات سے کوئی دلچسپی نہیں کہ سیما مذہب کی تبدیلی کے حوالے سے کیا کررہی ہیں لیکن میرے بچے معصوم ہیں اور ان کا مذہب تبدیل نہیں کروایا جاسکتا ہے۔‘

یادرہے کہ غلام حیدر کے سیما سے 4 بچے ہیں جن میں سب سے بڑے کی عمرتقریباً 9 سال ہے۔ سیما کی پاکستان سے بھارت روانگی کے وقت غلام حیدر بسلسلہ روزگاربیرون ملک مقیم تھا۔یادرہے کہ سیما اور سچن کی  پہلی ملاقات مارچ 2023 میں نیپال میں ہوئی تھی جہاں سیما نے ہندو مذہب اختیار کر لیا تھا، اتر پردیش پولیس نے 4 جولائی کو سیما کو غیر قانونی طور پر بھارت میں داخل ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور اسے پناہ فراہم کرنے پر سچن اور اس کے والد کو بھی حراست میں لیا گیا تھا اور بعد ازاں انہیں رہا کردیا گیا۔سیما اور سچن کی زندگیوں پر بھارت میں ایک فلم بھی بنائی جارہی ہے۔

About admin

Check Also

عورت کی یہ دو چیزوں سے دور ہی رہنا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) محبت ایک لافانی جذبہ ہے جو ہر انسان کی شخصیت میں قدرت …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *